458کنال اراضی کا معاملہ، عمران خان اور بشریٰ بی بی پر ایک اور الزام لگ گیا

اسلام آباد (پی این آئی) وزیر داخلہ رانا ثناء اللہ نے کہا کہ عمران خان نے 458 کنال اراضی اہلیہ کے نام پر لی،200 سے زائد کنال فرح کے نام پر لی گئی ، میرٹ پر کارروائی ہوگی ۔اسلام آباد میں نیوز کانفرنس کے دوران وزیر داخلہ نے کہا کہ عمرا ن خان نے گزشتہ روز کہا کہ ہمیں ہراساں کیاجارہاہے۔

 

دیوار سے لگانا بند نہ کیاگیا تو سب کچھ قوم کوبتاوں گا ، عمران خان بتائیں کہ کیا انہیں کوٹ لکھپت یا اڈیالہ میں بند کر دیا گیا؟، کیا عمران خان کا اےسی اتار دیا گیا ؟، پنکھا بند کر دیا گیا؟ یا ادویات بند کر دی گئیں؟،عمران خان سب کچھ اپنے مخالفین کے ساتھ 3 سال تک کرتے رہے ہیں۔وزیر داخلہ نے کہا کہ عمران خان کیا پوچھ گچھ سے پریشان ہو رہے ہیں، ابھی تو صرف سوالات پوچھے جا رہے ہیں، اراضی سکینڈل میں 5 ارب روپے کا غبن کیا گیا،اراضی سکینڈل میں اقرار نامہ، رجسٹری سب موجود ہے،اچھا ہے وہ قوم کوبتائیں کہ 2014 کے دھرنے کیوں دیئے تھے؟،پنجاب سے اکٹھی ہونے والی رقم وزیراعلیٰ ہاؤس جاتی تھی یا بنی گالہ؟، عمران خان بتائیں وہ 15 کلو ہیروئن کس کی ہے؟،اگر ہیروئن میری ثابت ہو جائے تو مجھے کڑی سزا دی جائے، عدلیہ سے اپیل کرتا ہوں میرے کیس کا سوموٹو لیں۔وزیر داخلہ نے کہا کہ عمران خان کو ڈی چوک پر بیٹھنے نہیں دیا گیا کیا یہ ہراساں کرناہے؟۔