پریس کانفرنس کے دوران بابر اعظم سے آئی پی ایل سے متعلق سوال

پی این آئی کے یوٹیوب چینل کو سبسکرائب کریں ۔

میلبرن (پی این آئی)پاکستان کرکٹ ٹیم کے کپتان بابر اعظم سے پریس کانفرنس کے دوران انڈین پریمیئر لیگ سے متعلق سوال پوچھا لیا گیا ، ایک صحافی نے پوچھا کہ ٹیمیں آئی پی ایل میں کھیلنے کے فوائد کے حوالے سے بات کرتیں ہیں، آپ کا کیا خیال ہے کہ اگر آپ کو موقع ملے تو اس سے آپ کو اور ٹیم کو مستقبل میں فائدہ ہو سکتا ہے۔صحافی کے اس سوال پر پاکستان کرکٹ ٹیم کے میڈیا منیجر نے مداخلت کرتے ہوئے کہا کہ ہم اس وقت ورلڈکپ سے متعلق سوال جواب کر رہے ہیں،

آئی پی ایل سے متعلق کوئی تبصرہ نہیں کر سکتے۔قومی ٹیم کے کپتان بابر اعظم نے کہاہے کہ شاہین کی انجری نہ ہوتی تو نتیجہ بدل سکتا تھا۔تفصیلات کے مطابق آئی سی سی ٹی ٹوئنٹی ورلڈکپ کے فائنل میں انگلینڈ نے پاکستان کو 5 وکٹوں سے شکست دیکر ٹی ٹوئنٹی کرکٹ کا تاج اپنے سر سجا لیا۔فائنل میں شکست کے بعد پوسٹ میچ پریزنٹشن میں گفتگو کرتے ہوئے پاکستان کرکٹ ٹیم کے کپتان بابر اعظم نے کہا کہ انگلینڈ کو جیت کے لیے مبارک باد دیتا ہوں جبکہ شائقین کرکٹ ہمیں

سپورٹ کرنے آئے ان کا بہت شکریہ۔ہمارا جہاں بھی میچ ہوا ہمیں بہت سپورٹ ملی۔انہوں نے کہا کہ ہمارے لیے فائنل میں پہنچنا اعزاز رہا،میرے خیال سے ہم نے 20 رنز کم بنائے ہماری بولنگ دنیا کی تیز ترین بولنگ ہے،بدقسمتی سے شاہین آفریدی انجری کا شکار ہوئے۔بعد ازاں میلبرن میں پریس کانفرنس کرتے ہوئے بابر نے کہا کہ افسوس ہوا فائنل ہارنے کا، ہم نے 20 رن کم بنائے تاہم پھر بھی بولرز نے ایفرٹ دکھائی، شاہین کی انجری سے بھی اچھا موقع ہاتھ نہ آسکا۔

انہوں نے کہاکہ دباؤ نہیں لیا، وکٹیں جلدی گرتی چلی گئیں، پاٹنر شپ بنانے کی وجہ ڈاٹ گیندیں زیادہ ہوگئیں، اس وقت ایک اچھی پاٹنرشپ کی اشد ضرورت تھی، ڈاٹ بالز پاکستان ٹیم کی خامی رہی ہے جس کو دور کرنا ہوگا۔بابراعظم نے کہا کہ مڈل آڈر پر خاصی تنقید ہو رہی تھی لیکن ورلڈ کپ میں مڈل آڈر نے اچھا پرفارم کیا، اوور آل ٹیم کی کارکردگی سے مطمئن ہوں، شاہین کی انجری نہ ہوتی تو نتیجہ بدل سکتا تھا۔

close