عمران خان نے نگران وزیر اعلیٰ پنجاب محسن نقوی پر سنگین الزامات کی بوچھاڑ کر دی

پی این آئی کے یوٹیوب چینل کو سبسکرائب کریں ۔

لاہور(پی این آئی)پاکستان تحریک انصاف کے سربراہ اور سابق وزیر اعظم عمران خان نے کہا ہے کہ کسی کو منشی کہنا کونسی توہین ہے ،کیانگران وزیراعلیٰ کی تعیناتی کرتے ہوئے الیکشن کمیشن کو معلوم نہیں تھا کہ محسن نقوی کا رجیم چینج آپریشن میں کیا کردار ہے ، سب جانتے ہیں کہ سندھ ہاؤس میں محسن نقوی کی موجودگی میں پیسہ تقسیم کیا گیا ،اس طرح کے شخص کی موجودگی میں شفاف انتخابات کیسے ممکن ہیں؟

فواد چوہدری کی گرفتاری کے حوالے سے نیوز کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ محسن نقوی نے اقتدار میں آتے ہی کارنامے دکھانا شروع کردیئے ہیں ،فواد چوہدری کی گرفتاری بھی اسی سلسلے کی کڑی ہے ،ہمارے دیگر کارکنوں کو بھی ہراساں کیا جارہا ہے ۔سابق وزیر اعظم نے کہا کہ عدلیہ اور ججوں سے اپیل کرتا ہوں کہ ہمارے بنیادی حقوق کی حفاظت کریں ، ہماری جمہوریت کو بچائیں، ماضی کی طرح اگر اس بار بھی عدلیہ نے اپنا آئینی کردار ادا نہ کیا تو ملک کو ناقابل تلافی نقصان پہنچے گا ،ہم نے سڑکوں پر آنے کی بجائے عدلیہ کا رخ کرنے کا فیصلہ کیا ہے تاکہ ملک کو نقصان نہ پہنچے۔عمران خان نے کہا کہ اعظم سواتی نے این آر او ٹو پر بات کی تو انہیں گرفتار کرلیا گیا ، حالانکہ جو اعظم سواتی کی رائے ہے وہی پاکستان کی اکثریت کی رائے ہے، کسی بھی معاملے پر رائے دینا جرم نہیں ہے ،عوام اب بھی کھڑی نا ہوئی تو بہت دیر ہوجائےگی۔

close