اقوام متحدہ کی قراردادوں کے مطابق مسئلہ کشمیر کو کشمیریوں کی رائے کے برعکس حل نہیں کیا جا سکتا، معاون خصوصی برائے اطلاعات رفیق نیر کا پیغام

مظفرآباد(پی آئی ڈی)4اگست 2022آزادکشمیر کے معاون خصوصی برائے اطلاعات، سمال انڈسٹریز کارپوریشن و ماحولیات محمد رفیق نیئر نے کہا ہے کہ تحریک آزادی کشمیر کے تناظر میں 5 اگست وہ سیاہ دن ہے جب بھارت کی قابض اور غاصب حکومت نے مقبوضہ کشمیر کی ریاست کے عوام کی منشاء کے برخلاف جموں و کشمیر کو حاصل خصوصی حیثیت 370 اور 35 اے کو ایک ناقابل قبول فرمان کے ذریعے ختم کر کے جموں و کشمیر کو بھارت کی یونین ٹیریٹری بنا دیا۔

بھارت نے صرف اسی پر اکتفا نہیں کیا بلکہ کشمیری عوام کو حاصل ڈومیسائل کے حق کو بھی جو ڈوگرہ دور میں انہیں حاصل تھے کو بھی یک جنبش قلم ختم کر کے غیر کشمیریوں کو جموں و کشمیر کے ڈومیسائل جاری کر دئیے۔بھارت نے مقبوضہ جموں و کشمیر کی خصوصی حیثیت کو اس وقت ختم کیا جب تحریک آزادی کشمیر کو دنیا بھر میں پذیرائی حاصل ہو رہی تھی اور یورپی ممالک بھارتی فوج کی جانب سے مقبوضہ کشمیر میں انسانی حقوق کی سنگین خلاف ورزیوں پر آواز بلند کر رہے تھے۔مسئلہ کشمیر کو نقصان پہنچانے کیلئے بھارت نے جو اقدامات کئے اس سے اقوام متحدہ میں موجود مسئلہ کشمیر کی حیثیت کو ختم نہیں کیا جا سکتا۔ان خیالات کا اظہار انہوں نے یوم استحصال کے موقع پر اپنے خصوصی پیغام میں کیا۔ انہوں نے کہا کہ اقوام متحدہ کی قراردادوں کے مطابق مسئلہ کشمیر کو کشمیریوں کی رائے کے برعکس حل نہیں کیا جا سکتا۔یہ اقوام متحدہ کی قراردادیں ہی ہیں جو کشمیریوں کو رائے شماری کا حق دیتی ہیں۔

خود بھارت کے سابق وزیراعظم جواہر لال نہرو نے اقوام متحدہ میں تحریری شکل میں یہ وعدہ کر رکھا ہے کہ جموں و کشمیر کے مستقبل کا فیصلہ استصواب رائے کی شکل میں کشمیری عوام کریں گے۔موجودہ بھارتی وزیراعظم نریندر مودی نے اقوام متحدہ کی قراردادوں کے برعکس جموں وکشمیر کی مسلمہ حیثیت کو نقصان پہنچانے کیلیے جو یکطرفہ اقدامات کئے ہیں وہ تمام بین الاقوامی قوانین کی بڑے پیمانے پر خلاف ورزی ہے۔انہوں نے کہا کہ میں آج کے دن اس عزم کا اعادہ کرتا ہوں کہ بھارت کے ان اقدامات سے مسئلہ کشمیر کی خصوصی حیثیت تبدیل نہیں کی جا سکتی۔تحریک آزادی کشمیر جو کشمیریوں کی مقامی تحریک ہے کے شہداء کی قربانیاں رائیگاں نہیں جائیں گی پوری پاکستانی قوم،آزادکشمیرکے عوام اور بیرون ملک مقیم کشمیری اپنے کشمیری بھائیوں کی پشت پر ہیں اور انشاء اللہ وہ دن دور نہیں جب کشمیری بھارت کے چنگل سے آزادی حاصل کریں گے۔انشاء اللہ مقبوضہ کشمیر کی بھارت سے آزادی نوشتہ دیوار ہے جو ہر حال میں حاصل ہو کر رہے گی۔میں اس موقع ہر بہادر اور جری کشمیر ی شہداء کو خراج عقیدت پیش کرتا ہوں جن کی قربانیوں کی بدولت مسئلہ کشمیر زندہ ہے انشاء اللہ ان قربانیوں کے صدقے کشمیری قوم بھارت سے آزادی لیکر رہے گی جن کی منزل الحاق پاکستان ہے۔۔۔۔