24یا 25مئی ؟عید الفطر کس تاریخ کو ہو گی؟ رویت ہلال ریسرچ کونسل نے پیشگوئی کردی


لاہور (پی این آئی) رویت ہلال ریسرچ کونسل نے عید الفطر25 مئی کو ہونے کی پیشگوئی کردی ہے۔شوال کا چاند 22 مئی کو پاکستان کے معیاری وقت کے مطابق رات 10 بج کر 39 منٹ پر پیدا ہوگا تاہم 23مئی کو بصری آلات کی مدد کے بغیر دکھائی نہیں دے سکے گا۔ رویت ہلال ریسرچ کونسل کے سیکرٹری جنرل خالد

اعجازمفتی نے کہا ہے کہ چاند اس وقت تک دکھائی نہیں دیتا ہے جب تک اس کی عمرغروب آفتاب کے وقت کم ازکم 19 گھنٹے اورسورج کےغروب ہونے اور چاند کے غروب ہونے کا درمیانی وقفہ کم ازکم 40 منٹ سے زائد نہ ہوجائے۔اس کے علاوہ چاند کا زمین سے زاویائی فاصلہ کم از کم 6 ڈگری اور چاند کا سورج سے زاویائی فاصلہ کم از کم 10 ڈگری ہونا چاہیے۔انہوں نے مزید بتایا ہے کہ شوال کا چاند 22 مئی کو پاکستان کے معیاری وقت کے مطابق رات 10 بج کر 39 منٹ پر پیدا ہوگا۔ہفتہ 23 مئی کی شام غروب آفتاب کے وقت چاند کی عمر اگرچہ پاکستان کے تمام علاقوں میں 20 گھنٹوں سے زائد ہوگی نیز غروب شمس اور غروب قمر کا درمیانی فرق پشاور، چارسدہ، راولپنڈی، اسلام آباد، مظفرآباد، گلگت اور لاہور میں 39 منٹ جبکہ کراچی، کوئٹہ اور جیوانی میں 40 منٹ ہوگا لیکن دیگر عوامل ناکافی ہونے کے باعث پشاور، لاہوراورکوئٹہ میں چاند بصری آلات کی مدد کے بغیر دکھائی نہیں دے سکے گا۔راولپنڈی، اسلام آباد، گلگت، مظفر آباد اور چارسدہ میں چاند ٹیلی سکوپ کی مدد سے بھی دکھائی نہیں دے سکے گا جبکہ کراچی اور جیوانی میں ہلال کی رویت کے لئے بصری آلات کی ضرورت پیش آ سکتی ہے۔ اِن حالات کے تناظر میں ہفتہ کی شام چاند نظر کا امکان انتہائی کم ہے لہٰذا رمضان المبارک کے 30 دن مکمل کرنے کے بعد عید پیر 25 مئی کو منائی جائے گی۔ خالد اعجاز مفتی نے کہا کہ پشاور میں چونکہ جُھوٹی شہادتیں قبول کر کے 24 اپریل سے رمضان المبارک کا آغاز کیا گیا تھا لہٰذا وہ لوگ 30 روزے مکمل کرنے کے بعد اتوار24 مئی کو عید منائیں گے حالانکہ وہاں ہفتہ 23 مئی کی شام غروبِ آفتاب کے وقت ہلال دوربین کی مدد سے دکھائی دینے کا بھی کوئی امکان نہیں ہے۔



اس وقت سب سے زیادہ پڑھی جانے والی خبریں