A Project of PNI Digital (SMC-Pvt) Limited

پاکستان میں کرونا وائرس ویکسین کب سے لگائی جائیگی؟وفاقی وزیر اسد عمر نےبتا دیا


لاہور(پی این آئی) وفاقی وزیر منصوبہ بندی اسد عمر نے کہا ہے کہ پاکستان میں کورونا ویکسین کا ٹرائل اگلے10دن میں شروع ہوگا، پاکستان میں چین کی تیار کردہ ویکسین کے ٹرائل کا تیسرا مرحلہ ہوگا، جس میں پاکستان بھی شامل ہوگا۔انہوں نے ٹویٹر پر اپنے پیغام میں کہا کہ پاکستان چین کی تیار کردہ کورونا ویکسین کے

تیسرے مرحلے کے ٹرائل میں شامل باقاعدہ شامل ہوگا۔جبکہ پاکستان میں کورونا ویکسین کے ٹرائل کا تیسرا مرحلہ اگلے دس روز میں شروع ہوجائے گا۔ پاکستان آکسفورڈ یونیورسٹی کی ویکسین کی تیاری میں بھی شراکت دار ہے۔آکسفورڈ یونیورسٹی کے ٹرائل میں بھی پاکستان حصہ دار ہے۔ اسی طرح چین ہمارا دوست ملک ہے، جبکہ پاکستان اور چین ایک دوسرے پر زیادہ انحصار بھی کرتے ہیں۔لہذا پاکستان میں چینی ویکسین کو اہمیت دی جارہی ہے۔دوسری جانب روس نے بھی کورونا وائرس کی توڑ کیلئے تیار ویکسین تیار کرلی ہے۔ ویکیسن کی پہلی کھیپ ملک کے مختلف خطوں میں بھی تقسیم کے لئے بھیجی ہے۔ روس کی وزارت صحت کے بیان کے مطابق روس کے قومی وبائی تحقیقی مرکز گیمیلیا کے ذریعہ تیار یہ ویکسین جس کا نام ’اسپوتنک -5 ہے ، روس کے مختلف علاقوں میں بھیج دی گئی ہے۔ اس سے ملک میں ویکسین کی فراہمی یقینی بنائی جاسکے گی۔یہ ویکسین پہلے ان لوگوں کو لگائی جائے گی جن کو کورونا سے زیادہ خطرہ ہے۔ روس دنیا میں پہلا ملک بن گیا جس نے 11 اگست کو کوڈ۔19 ویکسین کی منظوری دی تھی۔ یہ ویکسین اگلے سال یکم جنوری سے عام لوگوں کو دستیاب میں ہوگی۔ روس کے گیمیلیاریسرچ انسٹی ٹیوٹ اور وزارت دفاع کے ذریعہ مشترکہ طور سے تیار ’اسپوتنک -5‘ کے نام سے جانی جانے والی کورونا ویکسین سب سے پہلے کورونا متاثرین کے علاج میں مصروف طبی اسٹاف کو دی جائے گی۔یہ ویکسین’رشین انویسٹمنٹ فنڈ‘ ( آر ڈی آئی ایف ) کے ذریعہ تیار کی گئی ہے۔



اس وقت سب سے زیادہ پڑھی جانے والی خبریں