fbpx
A Product of PNI Digital (SMC-Pvt) Limited
تازہ ترین

کون سی ڈش افطاری میں 55 فیصد پاکستانیوں کی پسندیدہ قرار دیدی گئی؟


اسلام آباد (آئی این پی ) عوامی آرا جاننے والے ادارے پلس کنسلٹنٹ نے رمضان المبارک کے حوالے سے پاکستانیوں کی آرا پر مبنی نیا سروے جاری کردیا۔سروے میں 2 ہزار سے زائد شہریوں نے رائے کا اظہار کیا جس کے مطابق 55 فیصد پاکستانیوں نے افطاری میں پہلی پسند فروٹ چاٹ کو قرار دے دیا جبکہ پکوڑے 52 فیصد کے ساتھ دوسرے نمبر پر اور سموسمہ و رول 24 فیصد کے ساتھ پسندیدگی میں تیسرے نمبر پر نظر آئے۔افطاری میں پانی کے بعد

47 فیصد نے لال شربت کو سب سیزیادہ پسند کیا جبکہ 34 فیصد نے لیموں پانی اور 16 فیصد نے چائیکو افطاری میں ترجیح دی۔سحری میں 72 فیصد پاکستانیوں نے سالن اور 50 فیصد نے روٹی کھانے کا کہا۔۔۔۔۔ سینئر ن لیگی رہنما خواجہ آصف کو بھی رہائی کی خوشخبری سنا دی گئی لاہور(پی این آئی) سینئر صحافی عارف حمید بھٹی نے کہا ہے کہ کچھ دنوں میں خواجہ آصف بھی باہر آجائیں گے، حکومت کے احتساب کا بیانیہ کہاں جائے گا؟ شہبازشریف کی اوپن شٹ کیس میں ضمانت ہوگئی، عمران خان سے عوام سوال پوچھیں گے اگر ان کیخلاف کیس سچے ہیں سزا کیوں نہیں ہوئی؟انہوں نے نجی ٹی وی کے پروگرام میں گفتگو کرتے ہوئے بتایا کہ شہبازشریف کی جب ضمانت اپلائی کی گئی تو یہ تھا کہ پہلے حمزہ شہباز کی ہوگی۔قانونی ماہرین کا کہنا ہے کہ شہبازشریف کیخلاف اتنا اوپن شٹ کیس ہے کہ دنیا کا کوئی بندہ ضمانت نہیں لے سکتا، یہ ملک کو کس طرف لے کر جارہے ہیں؟ تین وزیراعظم پکڑے گئے کسی سے پیسا وصول نہیں کیا، ایف آئی اے اور نیب لانڈری ہے، آصف زرداری کے سارے کیسز کلیئر ہیں ۔کچھ دنوں میں خواجہ آصف بھی باہر آجائیں گے، لیکن احتساب کا بیانیہ کہاں جائے گا؟ پھر قوم کا تین سال کیوں ضائع کیا؟ نوازشریف، شہبازشریف، جتنے لوگ جیلوں میں رہے ان کے پیسوں کا حساب نکالا جائے۔عوام عمران خان سے سوال پوچھیں گے کہ احتساب کیوں نہیں ہوا؟ کیس سچے ہیں سزا کیوں نہیں ہوئی؟ اگر کیس جھوٹے ہیں تو پرچے خارج کیوں نہیں ہوئے؟ واضح رہے لاہور ہائیکورٹ نے منی لانڈرنگ ریفرنس میں مسلم لیگ (ن) کے صدر شہباز شریف کی ضمانت منطور کرتے ہوئے پچاس ، پچاس لاکھ روپے کے دو مچلکوں کے عوض رہا کرنے کا حکم دے دیا ہے۔ لاہور ہائیکورٹ کے جسٹس سردار سرفراز ڈوگر کی سربراہی میں دو رکنی بنچ نے شہباز شریف کی درخواست ضمانت پر سماعت کی۔اس موقع پر نیب پراسیکیوٹر سید فیصل رضا بخاری نے دلائل دیے۔ وکیل

شہباز شریف نے بتایا کہ یہ نیب کی بدنیتی ہے کہ بار بار گرفتار کررہے ہیں، شہباز شریف قومی اسمبلی میں قائد حزب ہیں،آئینی ذمہ داری پوری نہیں کرپا رہے ، شہباز شریف 70سال کے ہیں،انہیں مختلف بیماریاں لاحق ہیں۔سینئر صحافی عارف حمید بھٹی نے کہا ہے کہ کچھ دنوں میں خواجہ آصف بھی باہر آجائیں گے، حکومت کے احتساب کا بیانیہ کہاں جائے گا؟ شہبازشریف کی اوپن شٹ کیس میں ضمانت ہوگئی، عمران خان سے عوام سوال پوچھیں گے اگر ان کیخلاف کیس سچے ہیں سزا کیوں نہیں ہوئی؟



اس وقت سب سے زیادہ پڑھی جانے والی خبریں